دستور المرکبات
 

نمک جوَ (جواکھار)
افعال و خواص اور محل استعمال
مدر بول، مفتت سنگ کردہ و مثانہ اور مقوی معدہ ہے۔ کھانسی اور ضیق النفس کو فائدہ دیتا ہے۔

طریقۂ تیاری
جَو کے مُسلَّم پودوں کو خشک کر کے جلائیں اور اُس کی راکھ پانی میں خوب حل کر کے دو، ڈھائی گھنٹہ بعد پانی نتھار لیں اور چھان کر جوش دیں۔ پانی اُڑ جانے پر برتن میں صرف کھار باقی رہ جائے گا۔ اِس کو خشک کر کے استعمال کریں۔

مقدار خوراک
نصف گرام تا ایک گرام۔

نمک چرچٹہ
افعال و خواص اور محل استعمال
بلغمی کھانسی، ضیق النفس، دردِ شکم، نفخ شکم، سنگ گردہ و مثانہ اور استسقاء میں مفید ہے۔ اونٹنی کے دودھ کے ہمراہ استسقاء میں کھلانے سے خاص طور پر فائدہ ہوتا ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
طریقۂ تیاری: چرچٹہ کا پودا مع جڑ، پتوں اور شاخوں کے سایہ میں خشک کر کے جلائیں اور راکھ کو پانی میں خوب حل کر کے چھوڑ دیں۔ چند گھنٹوں کے بعد پانی نتھار کر پکائیں۔ جب پانی جل جائے اور نمک باقی رہ جائے تو استعمال کریں۔

مقدار خوراک
نصف گرام تا ایک گرام۔

نمک سلیمانی
وجہ تسمیہ
نمک سلیمانی حضرت سلیمانؑ کی طرف سے منسوب ہے، جیسا کہ علاج الامراض اور دوسری قرابادینوں میں متعدد نسخے اُن کے حوالے سے ملتے ہیں ، چنانچہ جوارِش سلیمانی کے علاوہ جوارِش بلادر کے بارے میں بھی کہا گیا ہے کہ اِس کے موجد حضرت سلیمانؑ ہیں (دیکھئے معجون بلادر)۔

افعال و خواص اور محل استعمال
معدہ اور ہاضمہ کو قوت دیتا ہے۔ محلل ریاح ہے۔

جزءِ خاص
نمکیات

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
نمک سانبھر ، نوشادر ہر ایک ۲۰ گرام اجمود، نانخواہ ، فلفل سیاہ، زنجبیل، قرنفل، زیرہ سیاہ، جائفل ، جاوِتری ہر ایک ۳ گرام کو کوٹ پیس کر سرکہ خالص میں جوش دے کر خشک کریں اور باریک سفوف بنائیں۔

مقدار خوراک
۲ تا ۳ گرام بعد طعام۔

نمک شیخ الرَّئیس
وجہ تسمیہ
یہ نسخہ شیخ الرَّئیس بو علی حسین بنِ سینا کا تالیف کردہ ہے، اِس لئے اُس کے نام سے موسوم ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
محلل ریاح، مقوی معدہ و جگر، ہاضم طعام، مؤلّددم۔

جزءِ خاص
نمک سانبھر۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
نمک سانبھر ۴۰ گرام فلفل سفید ۸ گرام، نوشادر زنجبیل، فلفل سیاہ، پودینہ خشک، تخم کرفس نانخواہ،تخم جرجیر، سنبل الطیب ہر ایک ۵ گرام کو ٹ پیس کر سفوف بنائیں۔

مقدار خوراک
۲ تا ۳ گرام ہمراہ آبِ سادہ۔

نمک کٹائی
افعال و خواص اور محل استعمال
سرفہ، ضیق النفس بلغمی اور تپ بلغمی کو فائدہ دیتا ہے۔ قاتلِ کرمِ شکم ہے۔

طریقۂ تیاری
کٹائی خرد کا پودا خشک کر کے جلائیں اور اُس کی راکھ پانی میں خوب حل کریں۔ چند گھنٹوں کے بعد پانی نتھار کر جوش دیں۔ جب پانی اُڑ جائے اور صرف نمک باقی رہے تو استعمال کریں۔

مقدار خوراک
نصف گرام تا ایک گرام۔

نمک نکچھکنی
افعال و خواص اور محل استعمال
مقوی معدہ اور مشتہی طعام ہے۔ بلغمی اور عصبی امراض کو فائدہ دیتا ہے۔

طریقۂ تیاری
نکچھکنی کا پودا خشک کر کے جلائیں اور اُس کی راکھ پانی میں خوب حل کر کے پانی نتھار لیں اور جوش دیں۔ پانی جلنے کے بعد نمک باقی رہ جائے گا۔

مقدار خوراک
نصف گرام تا ایک گرام۔