دستور المرکبات
 

مفرِّحات
فرحت بخش یا فرحت پیدا کرنے والی ادویہ۔ مفرحات معجون کی اُس قسم سے تعلق رکھتی ہیں جو ارواح کا تصفیہ اور حواسِ خمسہ باطنہ کو برانگیختہ کرتی یا تحریک پہنچاتی ہیں جس کی وجہ سے اِن قوتوں کو فرحت و تقویت ملتی ہے۔ مفرحات اپنے نسخوں کے تنوع اور اپنی اثر انگیزی کے لحاظ سے نہ صرف یہ کہ حواسِ خمسہ باطنہ پر اثر انداز ہوتے ہیں بلکہ امراضِ قلب اور اُن سے پیدا شدہ عوارِض، امراض ، اعضاء باہ و نظام تولید و تناسل اور وَبائی امراض میں بھی مفید و کارگر ہوتے ہیں۔ مفرّحات حرارت غریزی کو برقرار رکھتے اور قوتوں کی محافظت بھی کرتے ہیں۔ بعض مفرّحات جو مزاجاً بارِد ہیں ، امراض قلب میں مفید ہونے کے ساتھ ساتھ حرارت کو تسکین دیتے اور سدر و دُوار کو بھی رفع کرتے ہیں۔ مفرحات کے کئی نسخے تاریخ عالم کے بعض نامورو مشہور حکمرانوں کے لئے بھی مرتب کئے گئے ہیں جن میں شیخ الرَّئیس بو علی سینا کا مرتب کردہ نسخہ جو اُس نے نوح بن منصور کے لئے ترتیب دیا تھا، مشہور عام ہے۔ حمیّات حارّہ و مزمنہ، سوداوی امراض کے ازالہ اور فرحت و نشاط لانے کے ساتھ ساتھ اعضائے رئیسہ کی تقویت کے لئے بھی اِس کو استعمال کرایا جاتا ہے۔مختصر یہ کہ تفریح و تقویتِ قلب و اعضائے رئیسہ، دفع ضعف و نقاہت و تحفُّظِ حرارت غریزی ، دفع حمیات و امراض معدہ، دفع خفقان و اختلاجِ قلب اور تسکین حرارت کے لئے مستعمل ہے۔اِس مرکب کے اجزاء میں شامل ادویہ بالعموم مفرح و مقوی قلب ہوتی ہیں۔ اِس معجون سے ارواح کا تصفیہ اور حواسِ خمسہ باطنہ کو ترویح و تقویت ملتی ہے۔ اِس کے متعدد نسخے ہیں جو معمول بہا ہیں۔

مفرّح اعظم
اپنی افادیت تامّہ اور عظیم النفع ہونے کی بناء پر مفرّح اعظم کے نام سے معروف ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
نافع و دافع خفقان، مفرّح و مقوی قلب، دافع و حشتِ قلب، مقوی باہ، نافع طاعون و ہیضہ، دافع امراض وافدہ و طاریہ۔

جزءِ خاص
مشک و عنبر۔

دیگر اجزاء مع ترکیب تیاری
بہمنین ، سنبل الطیب، تج قلمی، قرفہ، قاقلتین، گلِ ارمنی، گلِ مختوم، جدوار خطائی ہر ایک ۴۔۴ گرام، مشک ۸ گرام کہرباء شمعی، کباب چینی، زرنباد ، درونج عقربی،برادۂ صندلین، نارِمشک،کشنیز خشک ۱۰۔۱۰ گرام ، زنجبیل، ساذج ہندی، سعد کوفی، زرشک، شقاقل مصری،گُلِ نیلوفر ۱۵۔۱۵ گرام،گُل گاؤ زباں ، پوست ترنج،طباشیر، آبریشم خام مقرض ۲۵۔۲۵ گرام برگِ بادر نجبویہ ۲۵ گرام۔

دیگر اجزاء مع ترکیب تیاری
ادویہ کو کوٹ چھان کر سفوف کر لیں پھر آبِ بہی شیریں ، آبِ انار شیریں ، عرقِ گلاب، عرقِ صندل، عرقِ گاؤ زباں ، قند سفید ہر ایک ۲۰۰(دو سو) گرام، شہد خالص دو چند ادویہ میں ملا کر قوام تیار کریں۔ بعد ازاں سفوف مذکورہ بالا اُس میں شامل کر کے مشک محلول ۱۰ گرام، عنبر اشہب محلول ۱۰ گرام، یاقوت رمّانی، یاقوت زرد محلول، یشب محلول ایک تولہ ، عنبراشہب محلول ، فاذزہر حیوانی ایک تولہ، زعفران محلول ۴ گرام ، ورق نقرہ محلول ۴ گرام، ورق طِلاء محلول ۴ گرام۔ سب کو ملا کر مفرّح تیار کریں۔

مقدار خوراک
۵ تا ۷ گرام ہمراہ عرق بید مشک یا آبِ سادہ۔

مفرّح اعظم (بہ نسخۂ دیگر)
افعال و خواص حسبِ بالا ہیں۔

جزءِ خاص
مشک و عنبر

دیگر اجزاء مع ترکیب تیاری
بہمنین، سنبل الطیب، قرفہ، اِلائچی خرد وکلاں ، گلِ ارمنی، گلِ مختوم، زعفران، جدوار، ورقِ طِلائ، ورقِ نقرہ ہر ایک ۴۔۴ گرام، مشک خالص ۸ گرام، یاقوت سُرخ، یاقوت زرد، یشب کافوری، کہرباء شمعی، کباب چینی، نار مشک ۸۔۸ گرام، درونج عقربی، زرنباد ، صندل سُرخ و سفید، کشنیز خشک، مُقشّر، عنبر اشہب، فادزہر حیوانی ۱۲۔۱۲ گرام، زنجبیل، زرشک، ساذج ہندی، سعد کوفی، شقاقل مصری، گلِ نیلوفر ۱۵۔۱۵ گرام ، گلِ گاؤ زباں ، پوست اُترج، طباشیرکبود، آبریشم خام مقرض ۲۵۔۲۵ گرام، بادرنجبویہ ۳۰ گرام، آبِ بہی شیریں ، آبِ انار شیریں ، عرقِ گلاب، عرقِ گاؤزبان، عرق صندل ہر ایک ۲۵۰ ملی لیٹر، قند سفید ۲۵۰ گرام، شہد خالص ، دوچند ادویہ کا قوام بنائیں اور ادویہ کا سفوف قوام میں شامل کر کے مرکب تیار کریں اور استعمال میں لائیں۔

مفرّح بارِد (بہ نسخۂ قرابادین ذکائی)
افعال و خواص اور محل استعمال
مفرَّح قلب، دافع خفقان و اختلاج، نافع ضعفِ قلب، دافع معدہ سِدر و دُوار، مسکّن حرارت۔

جزءِ خاص
مروارید

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
کافور ۳ گرام، بہمن سفید، تخم فرنجمشک، تخم شاہتر، تخم خرفہ، سنبل الطیب، تخم کاہو، تخم خیارین ہر ایک ۷ گرام مروارید و بیخ مرجان، کہربائے شمعی، گل گاؤ زباں ، طباشیرکبود، صندل سُرخ، بیخ کیوڑہ ہر ایک ۱۰ گرام، گلِ سُرخ، گلِ نیلو فر ہر ایک ۳۰ گرام۔ جملہ ادویہ کو کوٹ چھان کر نبات سفید ۱۲۵ گرام کا قوام کر کے مرکب تیار کریں۔

مقدار خوراک
۵ تا ۷ گرام۔

مفرّح شیخ الرَّئیس
افعال و خواص و محل استعمال
نافع ضعف قلب و ضعف عام، دافع خفقان، نافع تپ کہنہ و تپِ دِق، نافع حمیات سوداویہ۔

جزءِ خاص
درونج عقربی۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
عود ہندی ۲۵ گرام، درونج عقربی، زرنباد، بہمن سفید ہر ایک ۲۵ گرام، گل سُرخ ۲۰ گرام، برگِ گاؤ زباں ۲۰ گرام،تخم کاہو مقشر ۱۵ گرام، تخم خرفہ ۱۵ گرام، مغز کدو، مغز خیارین، مغز تخم خرپزہ ۱۵۔۱۵ گرام، برادۂ صندل سفید ۱۰ گرام، طباشیر کبود ۱۰ گرام، دانہ ھیل خرد ۱۰ گرام، بُسدِ احمر سوختہ ۵ گرام، مروارید ناسفۃ ۵ گرام، سرطان نہری سوختہ، کافور، کہرباء شمعی آبریشم خام،مقرض برادۂ صندل سُرخ، ہر ایک ۵۔۵ گرام کو کوٹ چھان کر سفوف کر لیں۔ بعد ازاں رُ بِّ سیبِ شیریں ، رُبِّ انارِ شیریں ، رُبِّ بہی شیریں ہم وزن ادویہ کا قوام کر کے سفوف ادویہ اِس میں ملا دیں۔ پھر زعفران عنبر، مشک محلول ۳۔۳گرام شامل کر کے مرکب تیار کریں اور محفوظ الہوا مقام پر نگہداشت کریں۔

مقدار خوراک
۳ تا ۵ گرام کسی عرق کے ساتھ۔