دستور المرکبات
 

مرہم رِسْل

وجہ تسمیہ
درختوں یا نباتات سے تراوِش پانے والے دودھ یا رطوبات کو رِسْل کہتے ہیں۔ چونکہ اِس مرہم کے مشتملات میں زیادہ تر اجزاء درختوں کی تراوش یا دودھ ہیں ، اِس لحاظ سے اِس کا نام ’’مرہم رِسْل‘‘ رکھا گیا۔ بعض لوگوں نے اِس کی کچھ اور توجیہ کی ہے اوراِس کو حضرت عیسیٰؑ کے حواریون کی طرف منسوب کیا ہے۔ یہ محل نظر ہے (اقبال)۔

افعال و خواص اور محل استعمال
قروح کو مندمل کرتا ہے، وَرم صلب سرطان ، خنازیر اور طاعون کی گلٹیوں کو زائل و تحلیل کرتا ہے۔

جزءِ خاص
گندہ بہروزہ۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
جاؤ شیر ، گندہ بہروزہ، زنگار،مرمکی، مَرتک (مردار سنگ) ہر ایک ۶ گرام، کندر، زراوِند طویل ہر ایک ۱۰ گرام مقل ازرق ۱۲ گرام، مردار سنگ ۱۵ گرام، اُشق ۲۰ گرام، موم سفید ، راتینج ہر ایک ۱۲ گرام جو دوائیں خشک ہیں اُن کا سفوف کر لیں اور جو دوائیں گوند کی طرح ہیں اُنہیں موم میں پکائیں۔ بعد میں روغنِ زیتون بقدرِ ضرورت شامل کر کے مرہم تیار کریں اور استعمال میں لائیں۔

ترکیب استعمال
ضرورت کے وقت زخم یا گلٹیوں پر لگائیں اور ٹھنڈی ہوا اور ٹھنڈے پانی سے محفوظ رکھیں۔

مرہم زنگار
افعال و خواص اور محل استعمال
مدمِّل قروح و جراحات ہے۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
موم ۵ گرام، روغنِ گل ، روغن دیودار ، روغنِ کنجد ۲۰ ملی لیٹر سب کو حرارت پہنچائیں۔ حرارت کم ہونے پر زنگار ۴ گرام باریک کر کے اِس نسخہ میں مزید شامل کریں اور خوب ملائیں۔

ترکیب استعمال
ضرورت کے وقت موم یا روغن کے ساتھ ملا کر نیم گرم زخم پر لگائیں۔

مرہم سائیدہ چوب نیم
وجہ تسمیہ
چونکہ اِس مرہم کو نیم کی لکڑی سے اُس کا اثر حاصل کرنے کے لئے خوب گھونٹتے اور چلاتے ہیں اِس لئے اِس ترکیب پر اِس کا نام رکھا گیا ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
ہر قسم کے زخم خصوصاً سرپستان کے زخموں کے لئے سریع الاثر ہے۔

جزءِ خاص
برگِ نیم

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
برگِ نیم توے پر جلائیں ، سیاہ ہونے پر باریک پیسیں ، اِس کے بعد نیم کی۲۵ گرام راکھ روغن سرسوں ۵۰ ملی لیٹر کو آگ پر گرم کر کے ملائیں اور آگ سے نیچے اُتار کر آدھ گھنٹہ تک نیم کی لکڑی سے خوب گھونٹیں اور استعمال میں لائیں۔

ترکیب استعمال
مرہم کو زخم پر لگا کر اوپر سے نیم کی راکھ چھڑکیں۔

مرہم سیاہ
افعال و خواص اور محل استعمال
آتشک اور ایسے زخموں میں جوعسیرالاندمال ہوں ، خاص طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔

جزءِ خاص
رال (راتینج)

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
رال ۴ گرام ،توتیا ۲ گرام، بکری کا سینگھ، سوختہ، پارہ، برگِ نیم ہر ایک ایک گرام ،پہلے برگ نیم پارہ کے ساتھ اِس قدر پیسیں کہ سیاہ ہو جائے۔ پھر روغنِ زرد ۱۰ ملی لیٹر موم سفید ۲ گرام پگھلا کر کپڑے سے صاف کر کے سب دواؤں کو پیس کر ملائیں اور خوب حل کریں اور ضرورت کے وقت زخم پر لگائیں۔

مرہم کافوری
افعال و خواص اور محل استعمال
محلل ورم ہے۔ مدمل قروح و ناسورہے۔ زخم کی سوزش اور جلن کو رفع کرتا ہے۔

جزءِ خاص
کافور

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
سفیدۂ کاشغری، موم سفید، روغنِ سرسوں ، سفیدی بیضۂ مرغ، ہر ایک ۸ گرام کافور ۲ گرام ، موم اور روغنِ سرسوں کوگرم کر کے کافور اور سفیدہ کاشغری پیس کر شامل کریں۔ سرد ہونے پر سفیدی بیضۂ مرغ کا اِضافہ کر کے خوب ملائیں۔ جب اچھی طرح آمیختہ ہو جائے تو استعمال میں لائیں۔

ترکیب استعمال
بطور مرہم مقام ماؤف پر لگائیں۔

مرہم مازو
افعال و خواص اور محل استعمال
بواسیری مَسّوں کے درد اور جلن کو دور کرتا ہے۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
مازو سبز ۵۰ گرام باریک پیس کر روغن موم۵۰۰ گرام میں ملا کر کھرل کریں۔

ترکیب استعمال
رفع حاجت کے بعد مسّوں پر لگائیں۔

مرہم مقل

افعال و خواص اور محل استعمال
اورامِ صلبہ اور صلابتِ عضلات میں مفید ہے۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
مقل ازرق، اُشق، گلِ بابونہ، اکلیل الملک، مکوء خشک، حاشا ، زوفاء خشک، تخم حلبہ، تخم کتاں ہر ایک ۸ گرام، گلِ سُرخ ۲۰ گرام، برگِ چقندر ۳ عدد، برگِ کرنب ۲ عدد زرنباد، زراوند مد حرج، مرزنجوش، پرسیاؤ شاں ، عود ہندی ہر ایک ۴ گرام کوٹ پیس کر پانی میں پکائیں۔ پھرروغنِ بید انجیر ۲۰ ملی لیٹر، روغن ناردین، ۱۵ ملی لیٹر ، شحم مرغ ۱۵ گرام، روغنِ مصطگی ۷ ملی لیٹر ملا کر سب کو خوب پکائیں اور مرہم تیار کریں۔

ترکیب استعمال
ضرورت کے وقت مقام ماؤف پر لگائیں۔

مرہم ناسور
عربی میں ناسور و ناصور دونوں کہتے ہیں ، نواسیر ونواصیر اِس کی جمع ہے۔ فارسی میں ریش رواں کہتے ہیں۔

افعال و خواص اور محل استعمال
ناسور کو مندمل کرتا ہے۔

جزءِ خاص
مردار سنگ

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
زرد چوب ( ہلدی)مردار سنگ ہر ایک ۳۰ گرام باریک سفوف کریں پھر روغنِ گل ۱۵ ملی لیٹر اور موم سفید ۶۰ گرام آگ پر پگھلا کر سفوف کوملائیں اور تھوڑا پانی ملا کر جوش دیں۔ جب پانی خشک ہو جائے اور دوائیں خوب حل ہو جائیں تو اُتار کر محفوظ کر لیں اور استعمال میں لائیں۔

ترکیب استعمال
ناسور کو نیم کے پانی سے دھوکر خشک کر کے مرہم لگائیں۔