دستور المرکبات
 

قیروطی (CERA BEES WAX)
وجہ تسمیہ
قیروطی موم اور روغن کے مجموعے کا نام ہے، یا وہ ادویہ جن میں موم اور روغن شامل ہوں۔ اگر سادہ قیروطی بنانا ہو تو پہلے روغنِ گل یا روغنِ کنجدیا روغنِ زیتون و چمیلی کو آگ پر گرم کر لیں۔ بعد ازاں اُس میں موم شامل کر دیں۔ تیل اگر ایک سیر ہو تو موم ایک پاؤ شامل ہوگا۔ جب موم پگھل جائے تو اُسے اُتار کر گھونٹ لیں اور محفوظ کر لیں۔
اجزائے ترکیبی کے لحاظ سے قیروطی کے متعدد نسخے ہیں۔ مثلاً قیروطی آرد باقلا، قیروطی کرنب، قیروطی آردِ جَو،قیروطی آردِکرسنہ، قیروطی بابونہ وغیرہ۔

قیروطی آردِ جو
وجہ تسمیہ
آرد جو کی شمولیت کی وجہ سے اِس نام سے موسوم ہوا۔

افعال و خواص اور محل استعمال
ذات الجنب میں مفید ہے۔ رقیق بلغم جو کہ مشکل سے نکل رہا ہو اُس کو خارج کرتا ہے۔ ورم کو تحلیل کرنے اور بلغم کو نُضج دیکر خارِج کرنے میں سریع التاثیر ہے۔

جزءِ خاص
آردِ جو۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
گل بنفشہ ۹ گرام، صندل سفید ۹ گرام، آرد جو ۹ گرام، تخمِ خطمی، سبوس گندم، اکلیل الملک ہر ایک ۹۔۹ گرام ادویہ کو کوٹ چھان کر روغن بنفشہ سے بنے ہوئے موم روغن کو بقدرِ ضرورت لے کر، آرد باقلا یا آرد حلبہ اور تخم کتاں ، ہم وزن کا اِضافہ کر کے قیروطی تیار کریں اور حسبِ ضرورت نیم گرم استعمال میں لائیں۔ اِس سے نضج مواد اور تحلیل مواد کی تاثیر بڑھ جاتی ہے۔

قیروطی آردِ کرسنہ
افعال و خواص اور محل استعمال
ذات الجنب ، ذات الصدر، ذات الرَّیہ، جمود الصدر، وجع الاضلاع اور ضیق النفس میں مفید ہے۔

جزءِ خاص
آرد کرسنہ

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
آردِ کرسنہ، آرد حلبہ ہر ایک ۵۰ گرام، شونیز، اصل السوس، ہر ایک ۲۰ گرام عاقر قرحا ۱۵ گرام کوٹ چھان کر موم کو روغنِ سوسن میں ملائیں اور بقیہ ادویہ کو اُس میں شامل کر کے قیروطی کو محفوظ رکھ لیں۔

طریقۂ استعمال
بوقت ضرورت گرم کر کے سینہ اور پہلو کی مالش کریں۔