دستور المرکبات
 

قُرص طباشیر ملیِّن
وجہ تسمیہ
طباشیر کے نام سے موسوم ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
نافع دِق و تپ محرقہ، مسکّن تشنگی،دافع قبض ، ملیّن۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
طباشیر، ترنجبین خراسانی ۲۰۔۲۰ گرام، صمغ عربی، کتیرا، خشخاش سفید، مغز تخم کدو شیریں ، مغز تخم خیارین، نشاستۂ گندم، ہر ایک ۵۔۵ گرام ادویہ کو کوٹ چھان کر لعاب اسپغول میں قرص تیار کریں۔

مقدار خوراک
۲ تا ۴ گولی ہمراہ عرق گاؤ زباں۔

قُرص طباشیر لُولُوی
وجہ تسمیہ
قرص طباشیر کے نسخے میں موتی کے اضافہ کی وجہ سے یہ نام رکھا گیا۔

افعال و خواص اور محل استعمال
سِل و دِق ، نفث الدم، اسہال ذوبانی، اسہال کبدی، اسہال دموی اور شدید بخاروں میں لاحق ہونے والے اسہال میں مفید ہے۔

جزءِ خاص
طباشیر ،کافور، مروارید

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
مروارید ناسفۃ، طباشیر، سرطان محرّق،تخم خشخاش سفید، تخم کاہو، تخم خرفہ، کتیرا۔ ہر ایک ۱۲ گرام ،کہربا شمعی، رُبُّ السوس، گلِ سُرخ ہر ایک ۸ گرام، مغز تخم خیارین ۲۰ گرام، صمغ عربی، بسدّ سوختہ۔ ہر ایک ۴ گرام ، کافور ۳ گرام، زعفران، آبریشم، ایک ایک گرام۔ جملہ ادویہ کو کوٹ چھان کر آبِ بارتنگ سبز میں قرص بنائیں اور استعمال میں لائیں۔

مقدار خوراک
۳ گرام تا ۵ گرام۔

قُرص کافور
افعال و خواص اور محل استعمال
نافع تپ محرقہ، نافع دِق و سِل، نافع حمیات ، حاد وَ یرقان۔

جزءِ خاص
کافور

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
زرشک ، طباشیر، گل سُرخ، ہر ایک ۷ گرام، تخم کاہو، تخم خرفہ، تخم کاسنی، کتیرا ، ہر ایک ۳ گرام مغز تخم خرپزہ،مغز تخم کدوئے شیریں۔ ہر ایک ۵ گرام ، صندل سفید، سفید رُبُّ السوس ، ہر ایک ۲ گرام، کافور ایک گرام۔ تمام ادویہ کو کوٹ چھان کر لعاب اسپغول میں قرص بنائیں۔

مقدار خوراک
۲ گرام تا ۳ گرام۔

قُرصِ کافور بہ نسخۂ دیگر
افعال و خواص اور محل استعمال
نافع ذیابیطس و امراض گُردہ و مثانہ۔

جزءِ خاص
کافور

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
تخم کاہو، مقشّر ۱۰ گرام، تخم خرفہ سیاہ ۷۵ گرام، طباشیر ۵۰ گرام، رُبُّ السوس ۵۰ گرام،گلِ سُرخ۲۵ گرام، کشنیز خشک ۲۵ گرام، اقاقیا ۱۰ گرام، گلِ ارمنی، صندل سفید، گلنار فارسی۔ ہر ایک ۲۵۔۲۵ گرام، کافور ۲ گرام۔ تمام ادویہ کو کوٹ چھان کر عرقِ گلاب میں قرص تیار کریں۔

مقدار خوراک
۳ تا ۴ اقراص ہمراہ عرقِ گاؤ زباں۔

قُرص کاکنج
وجہ تسمیہ
کاکنج کی شمولیت کی وجہ سے یہ ’’قرصِ کاکنج‘‘ کے نام سے موسوم ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
مدر بول، مخرج حصاۃ، نافع بول الدم اور مدمل قروح کلیہ و مثانہ ہے۔

جزءِ خاص
حبِ کاکنج

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
حب کاکنج، مغز تخم خیارین، مغز بادام مقشّر، رُبُّ السوس، نشاستۂ گندم، صمغ عربی ، کتیرا ، دم الاخوین، کندر، تخم کرفس ہر ایک ۵۰ گرام، افیون ۶ گرام کو کوٹ چھان کر پانی میں قرص بنائیں۔

مقدار خوراک
۵ گرام یا ۳۔۳ ٹِکیاں۔