دستور المرکبات
 

اقراص (Pills )
موجد: مشہور یونانی طبیب اندرو ماخس ثانی کو اِس کا مخترع بتایا جاتا ہے۔ اِس کواسقل بیوسِ (ASCULPIUS-II) ثانی بھی کہتے ہیں۔ (خزانۃ الادویہ)
اقراص قرص کی جمع ہے۔ قرص عربی میں ٹکیہ کو کہتے ہیں۔ حبوب ہی کی ایک قسم ہے جسے گول بنانے کے بجائے چپٹی یا تکونی شکل کا بنا لیا جاتا ہے۔ اجزاء اور امراض کے لحاظ سے اِسکی بے شمار قسمیں ہیں۔ قرص بنانے کے لئے دواؤں کی لگدی تیار نہیں کی جاتی بلکہ دوائے مسفوف کو کسی قدر نم کر لیا جاتا ہے جس سے اِس کی تحبیب (دانہ دار بننا) ہو جائے۔تحبیب کے لئے دواء کے سفوف میں گوند ملا لیا جاتا ہے۔ اِس کے بعد آلۂ تحبیب کے ذریعہ حسب ضرورت مختلف حجم کے اقراص تیار کر لئے جاتے ہیں۔

قرص افسنتین
وجہ تسمیہ
اپنے جزءِ خاص کے نام سے موسوم ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
نافع استسقاء، دافع یرقان، محلل اور امِ احشاء۔

جزءِ خاص
افسنتین

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
افسنتین ۱۰ گرام، عصارۂ غافث ، بادیان، تخم بتھوا ہر ایک ۱۵۔۱۵ گرام، ریوند چینی ۳ گرام ، لُک مغسول ۳ گرام، تخم کرفس ۶ گرام، تخم کاسنی، تخم کشوث ہر ایک ۱۰۔۱۰ گرام۔ تمام ادویہ کو کوٹ چھان کر سادہ پانی یا عرق مکوء میں گوندھ کر قرص تا ر کر لیں۔

مقدار خوراک
۵ تا ۷ گرام/۲ تا ۳ عدد۔

قرص ذیابیطُس
افعال و خواص اور محل استعمال
نافع ذیابیطس، نافع سلس البول۔

جزءِ خاص
طباشیرکبود

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
تخم خرفہ سیاہ، تخم کاہو مقشّر۔ ہر ایک ۷۵ گرام ، طباشیر کبود۵۰ گرام، گلِ سُرخ، کشنیز خشک مقشّر، تخم حمّاض، گلِ ارمنی ہر ایک ۳۰۔۳۰ گرام، برادۂ صندل سفید، گلنار فارسی، گردِ سِماق ۲۰۔۲۰ گرام کافور ۶ گرام۔
تمام ادویہ کو کوٹ چھان کر آبِ برگ خرفہ سبز میں گوندھ کربقدر نخود گولیاں تیار کر یں۔

مقدار خوراک
۳ گرام یا ۴ گرام قرص ہمراہ آبِ سادہ۔

قرص زرشک
افعال و خواص اور محل استعمال
حُمیٰ محرقہ میں مفید ہے۔ جگر کی حرارت کو زائل کرتی ہے۔

جزءِ خاص
زرشک

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
زرشک ۷۵ گرام ، گلِ سُرخ ۲۵ گرام ، تخم خرفہ، تخم کاسنی، مغز تخم خیارین۔ ہر ایک ۱۵ گرام ریوند چینی، سنبل الطیب۔ ہر ایک ۵ گرام۔ تمام ادویہ کو کوٹ چھان کر لعاب اسپغول میں قرص بنائیں۔

مقدار خوراک
۳ تا ۵ گرام ہمراہ آبِ سادہ۔