دستور المرکبات
 

روغنِ قُسط
وجہ تسمیہ
اپنے

جزءِ خاص’’قُسط تلخ‘‘ کے نام سے موسوم ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
فالج، رعشہ، تشنج، کزاز، خدر، وجع المفاصل میں مفید ہے۔ اعصاب کو تقویت دیتا ہے اور نافع اوجاع ہے۔

جزءِ خاص
قُسط تلخ

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
قسط تلخ سنبل الطیب ہر ایک ۱۰۰ گرام ادویہ کو کوٹ کر روغنِ زیتون اور آبِ سادہ ۵۰۰ ملی لیٹر میں جوش دیں۔ جب پانی خشک ہو جائے اور روغن باقی رہ جائے تو دواؤں کو روغن میں خوب ملیں اور ۵۰۰ ملی لیٹر پانی میں پھر سے جوش دیں۔ اِس طرح یہ عمل تین مرتبہ کر کے روغن کو چھانیں۔ پھر جند بیدستر،فلفل سیاہ ،فرفیون ، میعہ سائلہ ہر ایک ۳۰ گرام کو روغن میں حل کر کے مرکب تیار کریں۔

ترکیب استعمال
بوقت ضرورت نیم گرم مالِش کریں۔

روغنِ کچلہ
افعال و خواص اور محل استعمال
وجع المفاصل اور ریحی و عصبی دردوں میں مفید ہے۔

جزءِ خاص
کچلہ

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
افیون ۲۰ گرام کو شیر گاؤ ۷۵۰ ملی لیٹر میں حل کریں۔ اِس کے بعد کچلہ ۱۰(دس) عدد تراش کر اور روغنِ کنجد ۳۷۵ ملی لیٹر شامل کر کے آگ پر رکھیں ،اور دودھ خشک ہو جانے پر چھان لیں۔

ترکیب استعمال
بوقت ضرورت نیم گرم مالِش کریں۔

روغن لبوب سبعہ
وجہ تسمیہ
چونکہ اِس روغن میں ساتوں مغزیات شامل کئے جاتے ہیں ، اِس لئے اِسے روغنِ’’ لبوب سبعہ‘‘ کا نام دیا گیا ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
مقوی دماغِ ،دافع یبوستِ دماغ اور مدمل قروح ہے۔

جزءِ خاص
مغزیات/لبوب

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
مغز فندق، مغز پستہ، مغز بادام شیریں ، کنجد مقشّر،مغز چلغوزہ، مغز تخم کدوئے شیریں ، مغز اخروٹ۔ ہم وزن لے کر تیل نکالیں اور استعمال میں لائیں۔

ترکیب استعمال
بوقت ضرورت سر پر مالِش کریں۔

روغنِ مہوا/مچوقان/چکان
اپنے جز ء خاص مَہوا /مچوقان کے نام سے موسوم ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
بدن کے جوڑوں اور ہڈیوں کے درد کے لئے مجرب و مفید ہے۔

جزءِ خاص
روغنِ مچوقان

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
تیل مہوا سو گرام، اِلائچی کلاں ۲۵ گرام، جاوِتری ۲۵ گرام ، کافور ۲۰ گرام۔بڑی اِلائچی اور جاوِتری بقدرِ ضرورت کومہوے کے تیل میں اچھی طرح سے پکا لیں۔ تیل ٹھنڈا ہونے پر اُس میں کافور ملا لیں۔ پھر تیل کو چھان کر محفوظ کر لیں اور حسب موقع و ضرورت درد کے مقام پراِس کی مالِش کریں۔ سب سے بہتر وقت رات کو سونے سے پہلے کا ہے۔ اِس روغن سے بلا ناغہ مالِش کریں۔ موسمِ گرما میں مالِش کے وقت ہوا سے بچیں۔