دستور المرکبات
 

خمیرہ خشخاش
افعال و خواص اور محل استعمال
نزلہ حار اور حاد میں مفید ہے۔ نزلا وی رطوبات کو پھیپھڑوں کی طرف گرنے سے روکتا ہے۔ سِل اور کھانسی میں مفید ہے۔ پیپھڑ ے کے زخم مند مل کرتا ہے۔ مسکن حرارت ہے۔ کثرت طمث میں مفید ثابت ہوتا ہے۔

جزءِ خاص
خشخاش

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
کوکنار مسلم سو عدد ، اِس کا پوست علیحدہ کچل کر اور تخموں کو باریک پیس کر بارِش کے پانی ڈھائی لیٹر میں خوب جوش دیں۔ پھر چھان کر نبات سفید ڈیڑھ کلو کا قوام کر کے خمیرہ تیار کریں۔

مقدار خوراک
۵ سے ۱۰ گرام ہمراہ عرق گاؤ زباں ۱۲۵ ملی لیٹر۔
نوٹ: اِس خمیرہ کی قوت دو سال تک قائم رہتی ہے۔

خمیرہ صندل
افعال و خواص و محل استعمال
قلب کو قوت دیتا ہے۔ دافع خفقان ہے، گھبراہٹ اور حرارت کو زائل کرتا ہے۔ مسکن عطش ہے۔

جزءِ خاص
صندل سفید

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
برادہ صندل سفید ۷۵ گرام، عرقِ گلاب نصف لیٹر میں رات کو بھگوئیں ، صبح جوش دے کر صاف کر کے قند سفید ایک کلو قوام کریں اور خمیرہ بنائیں۔

مقدار خوراک
۵ سے ۱۰ گرام ہمراہ عرق گاؤ زباں ۱۲۵ لیٹر۔

خمیرہ گاؤ زباں سادہ
افعال و خواص و محل استعمال
قلب و دماغ کو قوت دیتا ہے ، خفقان ، وحشت اور مالیخولیا میں نافع ہے۔ بینائی کو قوت و جِلاء دیتا ہے۔

جزءِ خاص
گاؤ زباں

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
برگِ گاؤ زباں ۳۰ گرام گل گاؤ زباں ، کشنیز خشک مقشّر، آبریشم خام مقرض بہمن سفید، صندل سفید، تخم بالنگو، تخم فرنجمشک بادر نجبویہ ہر ایک ۱۰ گرام رات کو دو لیٹر پانی میں بھگو کر صبح جوش دے کر صاف کریں اور نبات سفید ۱ یک کلو شہد خالص ۲۵۰گرام ملا کر قوام تیار کریں۔

مقدار خوراک
۵تا ۱۰ گرام ہمراہ عرق گاؤ زباں ۱۲۵ ملی لیٹر۔