دستور المرکبات
 

حب شہیقہ/حبِّ اناردانہ
وجہ تسمیہ
مرض شہیقہ سے منسوب ہے

افعال و خواص اور محل استعمال
کالی کھانسی میں مفید اور زود اثر ہے۔

جزءِ خاص
انار دانہ

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
اناردانہ ۴۰ گرام جوا کھار ۵ گرام، فلفل سیاہ ۱۰ گرام ، فلفل دراز۲۰ گرام قند سیاہ ۸۰ گرام باریک کر کے قند سیاہ ملا کر چنے کے برابر گولیاں بنائیں۔

مقدار خوراک
دِن مںک چار مرتبہ ایک ایک گولی منھ میں ڈال کر چوسیں۔

حب عنبر مومیائی
وجہ تسمیہ
عنبر اور مومیائی سے تیار ہونے کی وجہ سے یہ نام رکھا گیا ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
دِل، دماغ اور اعصاب کے ضعف کو دور کر تی ہے۔ تقویت باہ اور تقویت اعضاءِ رئیسہ کے لئے مخصوص دوا ہے۔

جزءِ خاص
عنبر اور مومیائی۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
عنبر ایک گرام مومیائی خالص، مصطگی رومی ہر ایک نصف گرام کو روغنِ پستہ تین ملی لیٹر کے ہمراہ چینی کی پیالی میں ڈالیں پھر ایک تانبہ کے برتن میں اُس پیالی کو رکھ کر اس برتن میں عرقِ گلاب، عرقِ بہار نارنج اِس قدر ڈالیں کہ وہ پیالی کے بالائی کنارے کے نیچے رہے اور پیالی کے اندر نہ جائے۔ اِس کے بعد ایک دیگچی میں پانی بھر کر اُس کے اندر وہ برتن رکھ دیں۔ پھر دیگچی کا منھ بند کر کے گل حکمت کریں اور اُس کے نیچے تھوڑی آگ جلائیں تاکہ مومیائی پگھل جائے۔ اِس کے بعد اِسے آگ سے اُتار کر پیالی کی دوا میں فادزہر معدنی، مشک خالص ہر ایک ایک گرام مروارید ناسفتہ، طباشیر کبود قرنفل، جاوتری جائفل، بہمن سُرخ، بہمن سفید، دار چینی ،شقاقل مصری، زنجبیل، درونج عقربی، عود ہندی، عود صلیب، ثعلب مصری، جدوار خطائی ہر ایک نصف گرام باریک پیس کر ملا لیں اور بقدرِ نخود گولیاں بنائیں اور گولیوں کو مطلّٰی کر لیں۔ پھر استعمال میں لائیں۔

مقدار خوراک
ایک گولی صبح یا شام کو ہمراہ شیر گاؤ۔

حب غافث
وجہ تیہث
اپنے جزء خاص کے نام سے موسوم ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
بلغمی، سوداوی، حمیاتِ مزمنہ ومرکّبہ میں مفید ہے۔

جزءِ خاص
عصارہ غافث

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
عصارہ غافث ۲۰ گرام طباشیر، سنبل الطیب ہر ایک ۷ گرام ، گُلِ سُرخ ۵ گرام پانی میں پیس کر بقدر نخود گولیاں بنائیں۔

مقدار خوراک
۳ گرام ہمراہ عرق گاؤ زباں ۱۲۵ ملی لیٹر۔