دستور المرکبات
 

حبِّ حمل

وجہ تسمیہ
یہ حبوب استقرارحمل کی استعداد پیدا کرنے کی وجہ سے حبِّ حمل کے نام سے موسوم ہیں۔

افعال و خواص اور محل استعمال
حیض کی باقاعدگی کی صورت میں استقرارِ حمل کی صلاحیت پیدا کرتی ہیں۔ رحم کو تقویت دینے کے ساتھ ساتھ رحم کی اکثر بیماریوں میں اِن کا استعمال مفید ہے۔

جزءِ خاص
مشک خالص

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
مشک خالص ۲۵۰ گرام ،افیون خالص۱۲۵ ملی گرام ،جائفل ۱ عدد ، زعفران ۱ گرام، برگِ قنب ۲ گرام، قند سیاہ کہنہ(پُرانا گڑ)۵ گرام، چھالیہ چکنی ۳ عدد، قرنفل ۵ عدد۔جملہ ادویہ کو کوٹ چھان کربقدرِ ضرورت گڑ میں ملائیں۔ پھر جنگلی بیر کے برابر گولیاں بنائیں اور استعمال میں لائیں۔

مقدار خوراک
ایام حیض کے خاتمہ کے فوراً بعد صبح و شام ایک ایک گولی دودھ کے ساتھ تین روز تک کھائیں اور چوتھے روز مباشرت کریں۔

حبِّ خاص
وجہ تسمیہ
تقویت باہ میں اپنے مخصوص فعل کی وجہ سے ’’حب خاص ‘‘کے نام سے موسوم ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
قوت باہ کو برانگیختہ کرتی ، اعصاب، دل، دماغ اور جگر کو قوت دیتی ہیں اور دورانِ خون کوتیز کرتی ہیں۔

جزءِ خاص
کشتہ نقرہ

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
الاحمر ۶ گرام کشتہ عقیق ۱۲ گرام، کشتہ فولاد ۸ گرام، کشتہ نقرہ ۳۰ گرام، زعفران کچلہ مدبر ہر ایک ۱۲ گرام عنبر ۱۰ گرام ، مشک ۱ گرام،ورق نقرہ ۱۲ گرام ، عرقِ گلاب ۳۰۰ ملی لیٹر۔ پہلے زعفران اور ورقِ نقرہ کو الگ الگ عرق گلاب میں کھرل کریں۔ پھر بقیہ دوائیں ملا کر کھرل کریں اور عنبر کو گھی (۵ گرام) میں آگ پر پگھلائیں۔ جب سب دوائیں خوب حل ہو جائیں تو مشک کو عرقِ گلاب میں کھرل کر کے شامل کریں اور عرق گلاب میں مونگ کے برابر گولیاں بنائیں اور خشک ہونے پر ورقِ طِلاء چڑھائیں۔

مقدار خوراک
ایک گولی صبح ۲۵۰ ملی لیٹر دودھ کے ہمراہ استعمال کریں۔
نوٹ: کرمیوں کے موسم میں اِس دواء کو لینے سے احتیاط کریں۔

حبِّ سعال
وجہ تسمیہ
دافع سعال ہونے کی مناسبت سے اِس کا نام حب سعال رکھا گیا ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
سعال میں مفید ہے۔

جزءِ خاص
تخم خشخاش۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
صمغ عربی، کیترا، تخم خشخاش، شکر تیغال، مغز پستہ، مغز بادام، مغز بہدانہ ہم وزن لے کر آب کو کنار میں باریک پیس کر بقدر نخود گولیاں بنائیں۔ اگر اِس نسخہ میں دوسری دواؤں کے وزن کے برابر افیون کا بھی اِضافہ کر لیا جائے تو اِس کی افادیت بہت بڑھ جاتی ہے۔

مقدار خوراک
بوقت ضرورت ایک تا ۲گولی منھ میں رکھ کر چوسیں۔