دستور المرکبات
 

حب بخار
وجہ تسمیہ
دافع حمیٰ افعال کی بناء پر حب بخار کے نام سے موسوم ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
حمیٰ ، ملیریا اور موسمی بخاروں میں مفید ہے۔

جزءِ خاص
کرنجوہ

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
مغز کرنجوہ ۶۰ گرام فلفل سیاہ ۱۵ گرام دونوں دواؤں کو پیس کر لعاب صمغ عربی میں چنے کے برابر گولیاں بنائیں اور استعمال میں لائیں۔

مقدار خوراک
دو گولی صبح دو پہر شام۔

حبِّ بخاربہنسخۂ دیگر:بچھناک، شنگرف، فلفل سیاہ، سہاگہ ہر ایک ۵ گرام عرق لیموں کاغذی میں خوب پیس کر مونگ کے برابر گولیاں بنائیں اور ایک گولی دِن میں دو بار پانی کے ہمراہ کھائیں۔

حب پان
وجہ تسمیہ
عرقِ پان میں کھرل کئے جانے کی وجہ سے اِس کو حبِّ پان کے نام سے موسوم کیا گیا۔

افعال و خواص اور محل استعمال
آتشک میں خاص طور پر مفید ہے۔

جزء خاص
سم الفار۔

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
سم الفار ،طباشیر ،کا ت سفید ہر ایک تین تین گرام۔ جملہ ادویہ کو باریک پیس کر عرقِ پان میں خوب کھرل کریں اور بقدرِ مونگ گولیاں بنا لیں۔

مقدار خوراک
ایک گولی صبح ہمراہ مکھن استعمال کرائیں۔
نوٹ : اِس دوا کے استعمال کے دوران گھی، مکھن اور روغنی اشیاء زیادہ کھائیں۔

حب پپیتہ
وجہ تسمیہ
اپنے جزء خاص کے نام سے موسوم ہے۔

افعال و خواص اور محل استعمال
معدہ کی تقویت اور ہضم کی اصلاح کرتی ہے۔ تخمہ اور ہیضہ میں مفید ہے۔ ہیضہ کے زمانے میں اِس کا استعمال وبائی اثرات سے محفوظ رکھتا ہے۔اس کا استعمال بطور علاج و حفظِ ماتقدّم بھی کیا جاتا ہے۔

جزءِ خاص
پپیتہ وِلایتی

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری
پپیتہ وِلایتی ۱۰ گرام زنجبیل ، فلفل سیاہ، پودینہ خشک، گل مدار ، نمک لاہوری، نمک سیاہ ہر ایک ۲۰ گرام جملہ ادویہ کو کوٹ چھان کر عرق لیموں میں چنے کے برابر گولیاں بنائیں اور استعمال میں لائیں۔

مقدار خوراک
ایک گولی بعد طعام ہمراہ آبِ سادہ۔